119

موجودہ صورتحال سے متاثرہ طبقے کو فوری طور پر ماہانہ 20ہزار روپے کیش امداد دیجائے/مسلم لیگی راہنماؤں کی پریس کانفرنس

چترال(محکم الدین)پاکستان مسلم لیگ چترال کے رہنماؤں محمد کوثر ایڈوکیٹ صدر مسلم لیگ ن سب ڈویژن چترال، عبدالولی ایڈوکیٹ امیدوار پی کے ون چترال، ساجداللہ ایڈوکیٹ ایڈ یشنل جنرل سیکرٹری و ممبر صوبائی بار کونسل، خورشید حسین مغل صدر ڈسٹرکٹ بار و ممبر صوبائی بار کونسل اور نیاز اے نیازی ایڈوکیٹ رہنما مسلم لیگ ن چترال نے وزیر اعظم کی طرف کوونا وائرس کے متاثرین کیلئے تین ہزار روپے کے اعلان کو مذاق قرار دیتے ہوئے ما ہانہ بیس ہزار روپے کے حساب سے تین مہینوں کیلئے ساٹھ ہزار روپے فوری فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ چترال پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ کورونا وائرس کی وجہ سے محنت مزدوری کرنے والوں، وکلاء، صحافی، تاجر، پرائیویٹ سکولز اساتذہ اور ڈرائیور سب متاثر ہو چکے ہیں اور ان کے چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں اور انہیں حکومت کی طرف سے مکمل سپورٹ کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ 2015 کے سیلاب اور زلزلے میں سابق وزیر اعظم نواز شریف چترال کے گھر گھر میں متاثرین میں لاکھوں روپے تقسیم کئے جس کی بدولت متاثرین اپنے پاوں کھڑے ہونے کے قابل ہوئے۔ آج بھی کورونا وائرس متاثرین کو ایسے ہی امداد کی ضرورت ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ موجودہ حالات کے پیش نظر بجلی بلز، ترسیلات کے بلز اور بینک کے قرضے معاف کئے جائیں تاکہ لوگوں کو ریلیف مل سکے۔ انہوں نے سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کے اعلان کردہ گیس پلانٹ اور کلاش ویلیز روڈ، گرم چشمہ روڈ پر کام کا آغاز کرنے کا مطالبہ کیا۔ مسلم لیگ کے رہنماؤں نے ٹائیگر فورس کے نام پر من پسند افراد کو نوازنے کی کوششوں کی پر زور مذمت کی اور اسے حکومتی خزانے کو ہتھیانے کی سازش قراردیا۔انہوں نے منتخب نمائندوں پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اخباری بیانات دے کر عوام کی انکھوں میں دھول جھونکنے کی بجائے چترال کے ہسپتالوں میں ڈاکٹروں کیلئے حفاظتی کٹس اور دیگر سامان مہیا کریں۔ حکومت کی طرف سے ہاتھ دھونے اور قرنطینہ میں رہنے کے اعلانات سوا کوئی بہتری کے کام عملی طور پر ہوتے نظر نہیں آتے۔انہوں نے لواری ٹنل، شندور اور ارندو کے راستے آنے والے لوگوں کو سختی سے روکنے کا مطالبہ کیا اور ضلعی انتظامیہ کو موجودہ خود ساختہ مہنگائی کو کنٹرول کرنے میں ناکامی کا ذمہ دار ٹھہرایا۔