82

تحصیلدار چترال نے بازار معائنے کے دوران متعدد دکانداروں کیخلاف کاروائی کی

چترال(بشیر حسین آزاد)اسسٹنٹ کمشنر چترال عبدالولی خان کی ہدایات پرتحصیلدار چترال سیفور خان نے گذشتہ روز چترال ٹاؤن کے مختلف بازاروں کا معائنہ کرکے متعدد دکانداروں کو موقع پر جرمانہ کیا اور متنبہ کیا کہ گران فروشی،ناقص اشیاء کی فروخت،صفائی کا خیال نہ رکھنے اور زائد المعاد اشیاء کے فروخت کرنے پر سخت کاروائی کی جائے گی۔اُنہوں نے چترال ٹاؤن کے بازاروں میں سبزی فروش،میڈیکل اسٹور،قصائیوں،کریانہ اسٹور اور مرغی فروشی کے دکانوں کا معائنہ کیا اور سرکاری نرخ نامے پر عملدرآمد نہ کرنے والے دکانداروں کے خلاف قانون کے تحت جرمانے اور اُن کے خلاف ایف آئی آر کیا۔اُنہوں نے موقع پر مرغ فروشوں کو بائلر مرغیوں کی فروخت پر مکمل پابندی اور1200گرم سے کم اور بغیر تول کے فروخت کرنے والوں کے خلاف قانونی کاروائی کرنے کی وارننگ دی۔ اُنہوں نے اس موقع پر عوام پر زور دیتے ہوئے کہا کہ سرکاری نرخ نامہ کے مطابق اشیا خوردنوش کی خریداری کریں اور ناجائز منافع خوروں کے خلاف ضلعی انتظامیہ سے تعاون کریں تاکہ ان کے خلاف سخت سے سخت قانونی کاروائی عمل میں لاکر ان سے عوام کو چھٹکارا دلایا جاسکے۔جس کے لئے عوام بے خوف ہم سے شکایات کریں۔ اُنہوں نے چترال میں ناقص چپس کے خرید و فروخت پر مکمل پابندی اور ناقص چپس کو بازار سے اُٹھانے کے عزم کا بھی اظہار کیا۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ بچوں کی صحت کا خیال رکھتے ہوئے سکول انتظامیہ سکولوں کے سامنے اور سکولوں کے اندر ناقص چپس،بسکٹ اور ٹافیوں کی فروخت کا سلسلہ جلد از جلد بند کرکے رجسٹرڈ اور معیاری چپس کی فروخت کریں۔