131

اٹالین ترقیاتی ایجنسی کے ہیڈ نے پی پی ایف ہیڈ، ڈپٹی کمشنر اور سی ای او ایس آر ایس پی کے ہمراہ پاک اٹلی فرینڈ شپ بریج خیر آباد اور ٹی ایچ کیو ہسپتال دروش میں منصوبے کا افتتاح کیا


چترال(نامہ نگار) اٹالین ایجنسی فار ڈویلپمنٹ کوآپریشن (AICS)کے ہیڈ مس ایمنولا بنین نے پی پی اے ایف ہیڈ(انفراسٹرکچر) شمس بدرالدین، ڈپٹی کمشنر چترال حسن عابد اور ایس آر ایس پی کے سربراہ شہزاد ہ مسعودالملک کے ہمراہ خیر آباد دروش میں ایس آر ایس پی کی طرف سے پی پی اے ایف (PPAF) کی معاونت سے تعمیر ہونے والے”پاک اٹلی فرینڈ شپ بریج“ اور تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال دروش میں اپگریڈیشن منصوبوں کا افتتاح کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق سرحد رورل سپورٹ پروگرام (SRSP)کی طرف سے پاکستان پاورٹی ایلیویشن فنڈ (PPAF) کی معاؤنت سے چلنے والے پی پی آر پراجیکٹ کے تحت خیر آباد دروش میں 250فٹ طویل جیب ایبل پل اور تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال دروش میں فراہمی آب، مرمت اور تزئین اور طبی سامان اور آلات کی فراہمی کے منصوبوں کا افتتاح کیا گیا۔ اس موقع پر عمائدین علاقہ بڑی تعداد میں موجود تھے۔ خیر آباد میں منعقد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایمنولا بنین نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ اٹلی کے عوام اور حکومت کی طرف سے پاکستا ن میں غربت کے خاتمے کے لئے معاونت سے نمایاں کام ہورہے ہیں جنکا براہ راست اثر لوگوں کی زندگیوں پر پڑ رہاہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت پاکستانی حکومت کے ساتھ ملک اسطرح کے اور بھی منصوبوں پر کام کرنے میں دلچسپی رکھتی ہے۔ انہوں نے ایس آر ایس پی اور پی پی اے ایف کے کردار کو بھی سراہا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر چترال لوئر حسن عابد نے غربت کے خاتمے کیلئے معاونت فراہم کرنے پر اٹالین گورنمنٹ اور پی پی اے ایف کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے چترال میں بڑے پیمانے پر ترقیاتی کام کرنے پر ایس آر ایس پی کے کردار کی تعریف کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایس آر ایس پی کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر شہزادہ مسعود الملک نے کہا کہ ایس آر ایس پی نے پی پی آر پراجیکٹ کے تحت دروش میں بڑے پیمانے پر کام کئے ہیں، خیر آباد پل بھی مقامی کمیونٹی کی نشاندہی پر تعمیر ہوا جس کے بعد اب یہ گاؤں چترال پشاور مرکزی شاہراہ کے ساتھ منسلک ہوگیا ہے۔تقریب میں مقامی کمیونٹی کی طر ف سے اٹالین ایجنسی، ایس آر ایس پی اور پی پی اے ایف کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا گیا اور کہا گیا کہ اس پل کا علاقے کے سماجی اور معاشی معاملات پر دور رس اثرات ہونگے کیونکہ مرکزی سڑک سے براہ راست رابطہ نہ ہونے کی وجہ سے علاقے کے عوام کو گوناگوں مسائل درپیش تھے۔ مقامی عمائدین نے کہا کہ ایس آر ایس پی نے اس سے قبل بھی علاقے میں کئی ایک ترقیاتی کام کئے ہیں جس پر ہم ادارے کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ مقامی عمائدین نے کہا کہ رابطہ پل کی عدم دستیابی سے انہیں قریبی قصبے پہنچنے کیلئے طویل اور پرخطر مسافت طے کرنا پڑتا تھا تاہم اب اس پل کی تعمیر سے گھنٹوں کی مسافت کم ہو کر منٹوں پر آگئی ہے جسکی وجہ سے اس گاؤں کے لوگوں کو تمام شعبوں میں سہولتیں میسر آئینگی۔ مقامی کمیونٹی نے یہ مطالبہ بھی کیا کہ مستقبل میں ایسے ترقیاتی منصوبوں کیلئے ابتدائی سروے مقامی کمیونٹیز کی شراکت سے کئے جائیں کیونکہ باہر سے آنے والے ادارے مقامی حالات اور واقعات کا درست ادراک نہیں رکھتے۔

بعد ازاں اٹالین ایجنسی کے سربراہ نے ڈپٹی کمشنر چترال حسن عابد، سی ای او شہزادہ مسعودالملک اور پی پی اے ایف ہیڈ (انفراسٹرکچر) شمس بدرالدین کے ہمراہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال دروش کا دورہ کیا اور یہاں پر پی پی آر پراجیکٹ کے تحت مکمل کئے گئے منصوبے کا افتتاح کیا۔ اس موقع پر انہوں نے ہسپتال کے مختلف حصوں کا معائنہ اور ہسپتال کو فراہم کئے گئے طبی آلات اور دیگر سامان کو بھی دیکھا،ڈی ایچ او ڈاکٹر حیدر الملک اور ایم ایس ڈاکٹر ضیاء الملک نے بریفنگ دی۔ انہوں نے بتایا کہ پی پی آر پراجیکٹ میں ایس آر ایس پی کی طرف سے ہسپتال کیلئے اس منصوبے سے ہسپتال کی استعداد کار میں نمایاں بہتری آئے گی، پہلی مرتبہ اس ہسپتال میں چلڈرن نرسری قائم کی گئی ہے۔ علاقے کے عمائدین نے دروش اور ارندو کے علاقے میں بڑے پیمانے پر ترقیاتی کام کرانے پر SRSPکا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ تعلیم، صحت، مواصلات اور دیگر شعبوں میں ایس آر ایس پی کی معاونت کی وجہ سے بڑے پیمانے پر بہتری آئی ہے، انہوں نے بالخصوص ارسون روڈ، نگر کے مقام پر تعمیر ہونے والے پل اور دیگر منصوبوں کا ذکر کیا۔ مقامی عمائدین کی طرف سے مطالبہ کیا گیا کہ پی پی آر پراجیکٹ کو توسیع دیکر دروش کے دونوں یونین کونسلز میں مزید کام کرائے جائیں۔
بعد ازاں اٹالین ادارے کے سربراہ نے مقامی خواتین سے ملاقات کی اور انکے بنائے ہوئے مقامی دستکاری مصنوعات بھی دیکھے اور مقامی تنظیمات کو سراہا کہ خواتین منظم ہوکر مختلف تربیت حاصل کرکے انہیں غربت میں کمی کے لئے استعمال میں لارہے ہیں۔