82

آوی اور میرگرام کے عوام کو درپیش سفری مشکلات کو حل کرنے کے لئے جیب ایبل پل تعمیر کیا جائے/عمائدین آوی

بونی (افگن رضا) عمائدین و سیاسی کارکنان ویلج کونسل آوی کا ایک اہم اجلاس پاکستان تحریک انصاف کے کارکن نور عالم خان کی صدارت میں منعقد ہوا ا جس میں پاکستان پیپلز پارٹی، مسلم لیگ ن، جمعیت علمائے اسلام اور پی ٹی آئی کی قیادت نیز سماجی حلقوں نے بڑی تعداد میں شریک ہوئے۔ شرکاء اجلاس نے آوی کے مختلف مسائل پر مشاورت کرنے کیجس میں سے اہم مسئلہ علاقے کے عوام کو درپیش سفری مشکلات کو حل کرانے کے لئے اقدامات کرنا ہے۔ شرکاء اجلاس نے کہا کہ آوی اور میراگرام کے عوام کو درپیش شدید سفری مشکلات کے حل کیلئے آوی کے مقام پر جیب ایبل پل کی تعمیر نہایت ضروری ہے۔شرکاء اجلاس نے کہا کہ آوی کے مقام پر جیب ایبل پل کی تعمیر سے نہ صرف آوی اور میراگرام کے عوام کو فائدہ ہوگا بلکہ پورے یوسی ڑاسپور، یوسی مستوج اور یوسی یارخون کے لوگوں بھی اس سے پل سے استفادہ حاصل کر سکیں گے۔مقامی عمائدین نے کہ کہ چونکہ اپر چترال کا سب سے معیاری ہیلتھ سنٹر یعنی بونی میٹرنٹی ہوم کروئے جنالی بونی میں واقع ہے ان تینوں یوسیز سے ہسپتال آنے والوں کو بونی بازار میں گاڑیوں سے اتر کر بونی میٹرنٹی ہوم کروئے جنالی تک جانے کے لئے چار سے پانچ سو روپے کی بکنگ کرنی پڑتی ہے جس کی وجہ سے مریضوں اور ان کے لواحقین پر مالی بوجھ پڑ رہا ہے اگر آوی میں جیب ایبل پل بنتا ہے تو ڑاسپور، مستوج اور یارخون سے بی ایم سی آنے والے ڈائریکٹ ہسپتال کے سامنے اترنے کی صورت میں انکو اضافی مالی اخراجات سے نجات ملے گی۔ عمائدین کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس پل کی تعمیر سے بونی بازار میں لگنے والی رش اور ٹریفک جام سے بچنے میں مدد ملے گی۔اجلاس میں مقامی عمائدین نے ایک متفقہ قرارداد کے ذریعے پی ٹی آئی اپر چترال کی قیادت اور مشیر برائے اقلیتی امور وزیر زادہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ علاقے کے عوام کی سفری مشکلات کو مد نظر رکھتے ہوئے اس منصوبے کو منظور کرائیں۔