45

یارخون وٹرنری سنٹر کی بندش کا اقدام مایوس کن ہے، حکومت فوری طور پر فیصلے پر نظر ثانی کرے/بابر الدین

چترال(نذیر حسین شاہ)یارخون یونین کونسل کے معروف سماجی وسیاسی رہنما حاکم بابرا لدین نے یونین کونسل کے واحد وٹرنری سنٹر کی بندش پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی حکومت سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ علاقے کی پسماندگی، مقامی معیشت کا لائیواسٹاک پر انحصار کے پیش نظر وٹرنری سنٹر بانگ یارخون کو مستقل حیثیت دی جائے۔ ایک اخباری بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ یارخون یونین کونسل 25 ہزارآبادی پر مشتمل ہے جہاں سوفیصد آبادی کا انحصار مال مویشی پالنے پر ہے اور سخت موسمی حالات کے پیش نظر یہاں زرعی سرگرمی بھی نہیں ہوسکتے اور نہ زرعی پیدوار ضرورت کے مطا بق حاصل کی جاسکتی ہے جس کے نتیجے میں لوگ خوش گاؤ، گائے اور بھیڑ بکری پال کر اپنا گزر اوقات کرلیتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بانگ یارخون کی وٹرنری سنٹر کی 30جون کو بندش کی خبر علاقے کے عوام میں بجلی بن کر گر گئی ہے اور یہ خود پی ٹی آئی حکومت کے دعوؤں کی سراسر منافی بھی ہے جوکہ عوام کو مرغ، انڈے، بیل، گائے خود ہی فراہم کرکے ان کی معیشت کو سہارا دینے کی پالیسی پر گامزن ہے لیکن یہاں پوری یونین کونسل میں لائیواسٹاک کو بیماریوں کے رحم وکرم پر چھوڑ ا جارہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس سنٹر کو مستقل بنیادوں پر قائم کرکے علاقے کے سوفیصد مویشی پال کسانوں کو مشکل سے نجات دلائی جائے۔