59

لینگ لینڈ سکول اینڈ کالج کی نجکاری کو مسترد کرتے ہیں،فیصلے پر نظر ثانی کی جائے/مولانا عبدالاکبرچترالی

چترال(محکم الدین)ممبرقومی اسمبلی مولانا عبدالاکبر چترالی نے کہا ہے کہ چترال کے معروف تعلیمی ادارہ لینگ لینڈ سکول اینڈ کالج ضلعی حکومت کے زیر انتظام چترال کے متوسط طبقے کے بچوں کو تعلیم فراہم کر رہا ہے اور اس تعلیمی ادارے سے پڑھے ہوئے چترالی قوم کے بچے ملک اور بیرون ملک اعلی عہدوں پر کام کررہے ہیں۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا اب سننے میں آ رہا ہے کہ اس تعلیمی ادارے کو چترال کے عوامی نمائندگان کو اعتماد میں لئے بغیر پرائیویٹائز کرنے کا عمل جاری ہے اور 29 جولائی کو باقاعدہ پر طور اسے پرائیوٹائز کیا جائے گا۔مولانا چترالی نے کہاکہ اس سکول کو چترال کے ممبران اسمبلی اورضلعی حکومت سے مشاورت کے بغیر پرائیوٹائز کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور اسے کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا اور ضلعی حکومت اور ممبران اسمبلی سے مشاورت کے بغیرسکول کو پرا ئیوٹائز کرنے کے سنگین نتائج نکلیں گے۔انہوں نے کہاکہ چترال میں یہ واحد تعلیمی ادارہ ہے جہاں سے غریب اور متوسط طبقے کے بچے تعلیم حاصل کر رہے ہیں اور یہ عمل اشرافیہ کو ایک آنکھ نہیں بھاتی، اس لئے اس تعلیمی ادارے کو متوسط طبقے کیلئے شجر ممنوعہ بنانے کی سازش کی جارہی ہے جسے ہر گز قبول نہیں کیا جائے گا۔