عمائدین بونی کا اجلاس، بونی بچاو تحریک شروع کرنے کا فیصلہ

این ایچ اے کی مبینہ لاپرواہی کی وجہ سے بونی کے زمینات کو شدید خطرہ لاحق ہو گیا ہے

اشتہارات


بونی (چ،پ) اپر چترال کے ہیڈ کوارٹر بونی میں این ایچ اے کے مبینہ لاپرواہی کی وجہ سے لوگوں کی زمینات کو درپیش خطرے کے پیش نظر عمائدین کا ایک اہم اجلاس منعقد ہوا جسکی صدارت امیر جماعت اسلامی اپر چترال مولانا جاوید حسین نے کی جبکہ علاقے کے عمائدین نے کثیر تعداد میں شریک ہوئے۔ اجلاس میں اس سلسلے میں مشاورت کی گئی اور بونی کے زمینات کو دریا بُرد ہونے سے بچانے کے لئے "بونی بچاؤ تحریک”شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ شرکائے اجلاس نے این ایچ کے غیر ذمہ درانہ کام اور عدالتی احکامات کی خلاف ورزی پر احتجاج کرنے وجہ سے لوگوں پر ایف آئی آر کے اندراج کی مذمت کرتے ہوئے اسے شہریوں کی آزادیِ اظہارِ رائے سلب کرنے کی کوشش قرار دیا۔ اجلاس میں منظور شدہ قرارداد میں پرزور مطالبہ کیا گیا ہے کہ دریا کنارے سے ملبہ ہٹانے کے لئے فی الفور مزید وسائل کی فراہمی یقینی بنائی جائے اور بونی کے عوام کے خلاف درج ایف آئی آر واپس لیا جائے۔قراردار میں اس امر کا اعادہ کیا گیا کہ اس عوامی تحریک کے دائرہ کار کو بڑھانےکے لئے بونی کے تمام گاؤں میں نشست رکھی جائے گی اور این ایچ اے کا کام صرف اسی وقت دوبارہ شروع کروایا جائے گا جب بونی کے عوام کے تمام خدشات دور کیے جائیں۔

#Chitralpost