بدھ. ستمبر 28th, 2022

چترال(بشیرحسین آزاد)سی اینڈ ڈبلیو ڈویژن چترال کے ساتھ کام کرنے والے ٹھیکہ داروں نے ڈویژنل اکاونٹس آفیسرسراج الحق کے دفترسے اکثرغیر حاضری ،غیراخلاقی روئیے اورغیرقانونی پیسے لینے پر وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا، اکاؤنٹنٹ جنرل خیبر پختونخوا اوردیگرمتعلقہ حکام سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ مذکورہ افسر کو چترال سے فوری طور پر تبدیل کیا جائے۔پیرکے روز آل گورنمنٹ کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن اپرچترال کے صدرموسیٰ ولی،لوئرچترال کے صدرسیدالدین،جنرل سیکرٹری سہیل احمد،اسمارخان،جاوید اختر، ریاض احمد،صفی الرحمن،غلام اللہ،اقبال الدین،ایوب،سمیع اللہ،دلستاد،خان محمد،ابواللیث رامدسی،شریف الدین،حسین شاہ،سروراحمد،انجینئرمحمدولی،ممتازحسین اوردوسروں نے چترال پریس کلب میں ایک پرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ڈویژنل اکاونٹس آفیسرکے پاس اپراورلوئرچترال کے تین محکمے سی اینڈڈبلیو،ایری گیشن اور پبلک ہیلتھ کے چارچ ہیں، وہ چترال کے تمام غیرقانونی کاموں میں ملوث ہے جن میں ایڈیشنل کال ڈیپازٹ ریلیزکرنے پر، پروفارمہ،ٹینڈرزپراضافی پیسے لینا،ٹینڈرز میں اپنے بیٹے اوردوسرے غیرمقامی ٹھیکہ داروں کے نام پرچترال میں ٹینڈرڈالکرمقامی ٹھیکہ داروں کوبلیک میل کرکے پیسے لیناشامل ہیں۔انہوں نے ارباب اختیارسے مطالبہ کیا کہ اکاونٹنٹ سراج الحق کا فوری طور پر چترال سے باہرتبادلہ کیاجائے بصورت دیگرچترال کے تمام ترقیاتی کام روک کر ٹھیکہ دار برادری سڑکوں پرآکراحتجاج کرنے پرمجبورہوجائینگے۔