امریکی شہری نے ایک کروڑ تیس لاکھ روپے کے عوض مارخور کا کامیاب شکار کیا

چترال(گل حماد فاروقی)امریکی شہری کرسٹوفر نے گذشتہ روز چترال میں مارخور کا کامیاب شکار کیا جبکہ آئی بیکس کے شکار کیلئے آنیوالے نیوزی لینڈ کے شکاری کو کامیابی حاصل نہ ہو سکی۔ تفصیلات کے مطابق امریکی شہری کرسٹوفر نے ٹرافی ہنٹنگ کے سلسلے میں محکمہ وائلڈ لائف سے 92ہزار امریکی ڈالر جسکی مالیت تیس کروڑ روہے پاکستانی بنتے ہیں ،میں مارخور شکار کی ٹرافی بڈنگ کی تھی اور اس سلسلے میں گذشتہ دنوں انہوں نے توشی گیم ریزرو میں مارخور کا کامیاب شکار کیا۔ محکمہ وائلڈ لائف کے ڈویژنل فارسٹ آفیسر محمد حسین نے ہمارے نمائندے کو تفصیل سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ امریکی شہری نے ٹرافی ہنٹنگ کے لئے 92ہزار ڈالر میں بولی دی تھی جو کہ سب سے زیادہ ہونے کی وجہ سے کامیاب ٹھری تھی، بولی کے رقم کے علاوہ امریکی شکاری نے شوٹنگ لائسنس کی مد میں 10ہزار روپے جمع کرائے تھے۔ اسی طرح آئی بیکس کے شکار کے لئے نیوزی لینڈ کے شکاری مسٹر سٹیسی نے ایک لاکھ پنتالیس ہزار روپے اور شوٹنگ لائسنس کیلئے دس ہزار روپے جمع کرائے تھے ۔
شاہ شاہ کے علاقے البرہان توشی و ی سی سی کے جنرل سیکرٹری شہزادہ میر حسنات الدین (المعروف شہزادہ گل) نے ہمارے نمائندے کو بتایا کہ امریکی شہری نے مارخور کا کامیاب شکار کیا جبکہ نیوزی لینڈ کے شہری نے تین مرتبہ فائرنگ کیا مگر آئی بیکس کا شکار نہ کر سکااور کل دوبارہ کوشش کرے گا کہ آبیکس کا شکار کرے۔انہوں نے بتایا کہ یہ شکاری ایک ہیلی کاپٹر میں آئے تھے جن میں تین غیر ملکی اور پاکستانی میڈیا ٹیم ہیں۔
شہزادہ گل نے بتایا کہ اس مارخور کی سینگیں 44 انچ لمبے ہیں اور اس کی عمر دس سال ہے۔انہوں نے کہا کہ چترال میں کل 12 VCC ہیں مگر 1997 سے لیکر آج تک 10 ویلیج کنزرویٹری کمیٹی نے کوئی شکار نہیں کرایا اور مفت میں پیسے لے رہے ہیں۔ ان کا مزید کہنا ہے کہ اس نے پچاس شکار کرائے ہیں اور پچھلے تیس سال سے کنزرویٹری نظام متعارف ہوا ہے مگر اس میں صرف دو ، وی سی سی میں شکار ہوا ہے باقی ویسے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ البرہان توشی وی سی سی میں 350 مارخور پائے جاتے ہیں ۔