چترال پولو گراؤنڈ کے دو تاریخی یادگاروں کو اصلی حالت میں بحال کیا جائے/عوامی حلقوں کا مطالبہ

چترال(بشیر حسین آزاد)چترال ٹاؤن کے ہزارسال پرانے تاریخی پولو گراونڈ میں دویادگاریں تھیں۔ایک قدیمی مسجد تھی دوسری یادگار بارہ دری تھی جس میں بیٹھ کر معززین ،حکمران اور اہم شخصیات پولو دیکھتے تھے۔پولو گراؤنڈ کی مرمت اور توسیع کے نام پر دونوں یادگاروں کو ختم کردیا گیا ہے۔چترال کے سیاسی،سماجی اور ثقافتی حلقوں نے ان یادگاروں کی دوبارہ بحالی کا مطالبہ کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر چترال، وزیر سیاحت وثقافت خیبر پختونخواہ،وزیر اعلیٰ اوروزیراعظم سے فوری ایکشن لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔شہریوں نے اس سلسلے میں صوبائی کمپلینٹ سیل اور وزیر اعظم کے کمپلینٹ پورٹل پر بھی شکایت درج کرائی ہے۔سماجی حلقوں نے اس بات پر نہایت برہمی کا اظہار کیا ہے کہ ضلعی انتظامیہ نے قدیم مسجدکو ختم کرکے اسٹور بنادیا۔ان حلقوں نے مطالبہ کیا ہے کہ دونوں یادگاروں کو اصلی حالت میں بحال کیا جائے۔