گندم کی فراہمی کی بندش اور فلور ملز کے خلاف دروش میں زبردست احتجاجی مظاہرہ

اشتہارات

دروش(چ،پ)دروش میں بڑھتے ہوئے آٹا بحران اور سرکاری گودام سے فلور ملز کو گند م کی سپلائی کے خلاف جمعہ کے روز احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ تفصیلات کے مطابق بڑی تعداد میں احتجاجی مظاہرین دروش بازار چوک میں جمع ہو کراحتجاجی جلسہ منعقد کیا جس کی صدارت سینئر سیاسی و سماجی راہنما حاجی محمد شفاء نے کی۔ احتجاجی مظاہرے سے حاجی محمد شفاء،سینئر سیاسی راہنما و پی ٹی آئی کے ضلعی راہنما ارشاد مکرر،جے یوآئی کے صلاح الدین طوفان، وی سی فورم کے صدر و ویلج چیرمین عمران الملک، جے یو آئی کے قاری فضل حق و دیگر کے علاوہ سابق ضلعی ناظم حاجی مغفرت شاہ نے بھی خطا ب کیا۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ سرکاری گودام سے عوام کو گندم کی فراہمی کو معطل کرکے نجی فلور مل کو گندم فراہم کرنا دروش کے عوام کے ساتھ زیادتی ہے، لوگ گندم کے حصول کے لئے دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں مگر نہ گندم مل رہا ہے اور نہ ہی آسانی سے آٹا مل رہا ہے، مخصوص عناصر فلور ملز کی پشت پناہی کر رہے ہیں جوکہ افسوسناک امر ہے۔ مقررین نے مقامی انتظامیہ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ انکی نااہلی کی وجہ سے رمضان کے ماہ مبارک میں عوام اذیت کا سامنا کر رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ انتظامیہ فلورملز کی پشت پناہی کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام دروش فلور ملز کو مسترد کرتے ہیں، عوام کو سرکاری گودام سے گندم فراہم کیا جائے بصورت دیگر سخت عوامی رد عمل آئے گا۔ مقررین نے کہا کہ عوامی مفاد کے معاملے میں ہم سب متحد ہیں اور یک آواز بن کر اپنا حق حاصل کریں گے۔
جلسے میں قرارد اد کے ذریعے مطالبہ کیا گیا کہ دروش فلور ملز کو فوری طور پر بند کیا جائے ورنہ عوام بزور طاقت اسے بند کریں گے، عوام کو دروش گودام سے گندم فراہم کیا جائے، وزیر اعظم مفت آٹا اسکیم کے تحت ہر خاندان کو موبائل مسیج کے بجائے شناختی کارڈ کی بنیاد پر آٹا دیا جائے۔ مقررین نے اسسٹنٹ کمشنر دروش توصیف اللہ پر بھی تنقید کرتے ہوئے اسکے فور ی تبادلے کا مطالبہ بھی کیا۔
جلسے کے موقع پرسینئر سیاسی راہنماء ارشاد مکرر کی سربراہی میں ایک عوامی کمیٹی کے قیام کا اعلان کیا گیا جو کہ دروش گرین گودام سے فلور ملز کو آٹا کی سپلائی کو روکے گی۔