113

کالاش ویلی بمبوریت میں برساتی نالوں میں طغیانی سے سیلاب، سات گھروں اور کھڑی فصلوں کو نقصان پہنچا

چترال (محکم الدین) کالاش ویلی بمبوریت میں بدھ کی دوپہر موسلادھار بارش کے نتیجے میں سیاحتی وادی کے کئی مقامات پر برساتی نالوں میں طغیانی نے سیلاب کی شکل اختیار کرلیا جس کی زد میں آکر برون گاؤں میں سات گھرانوں کو نقصان پہنچا جبکہ معروف سماجی کارکن کالاش خاتون شاہی گل سیلاب کے دوران جان بچاتی ہوئی زخمی ہوئی۔ متاثرین میں شاہی گل، نورشاہدین، بھٹو، زرین، فرید احمد اور انیژ میں فضل الرحمن شامل ہیں جن کے گھروں کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔سیلاب سے برون میں واقع قدیم کالاش مڈوک جال (قبرستان) بری طرح متاثر ہو چکا ہے جبکہ سیلاب سے گاؤں کی واٹر سپلائی سکیم جسے یونانی این جی او کے سر براہ اتھاناسیاس نے تعمیر کیا تھا، نقصان پہنچا ہے جس کی وجہ سے برون گاؤں کے لوگوں کو پینے کے پانی کے حصول میں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ سیلابی ملبہ نئی تعمیر ہونے والی ہائیر سکینڈری سکول کی عمارت میں داخل ہوگیاہے تاہم ا سے کوئی زیادہ نقصان نہیں ہوا ہے۔ لیکن سیلاب سے کندیسار، بتریک، برون، انیژ اور اوونگ کے مقامات میں مکئی، لوبیا کی کھڑی فصلوں اور پھلوں کے باغات کو نقصان پہنچا ہے۔ سیلاب نے کالاش فیسٹول اوچال کو بری طرح متاثر کیا ہے۔ سیلابی ملبوں کی وجہ سے جا بجا روڈ کی بندش سے سیاحوں کی گاڑیاں عا رضی طور پر پھنس گئی ہیں جس سے بعض سیاح پریشان جبکہ اکثر سیاح اس کو انجوائے کر رہے ہیں۔ لوگوں کی بہت بڑی تعداد وادی میں موجود ہے۔ تنگ سڑکوں اور سیلاب کے باعث روڈ بند ہونے کی بنا پر سیاحوں کو آنے جانے میں شدید مشکلات پیش آرہی ہیں۔